Connect with us
Wednesday,12-May-2021

بین الاقوامی

بیڈمنٹن انڈیا اوپن کے ساتھ ملک میں واپسی کے لئے تیار

Published

on

Badminton..

یونیکس سن رائز انڈیا اوپن 2021 ٹورنامنٹ کے ساتھ ملک میں بیڈمنٹن واپسی کے لئے تیار ہے۔ 11 سے 16 مئی تک دارالحکومت کے کے ڈی جادھو انڈور ہال میں شائقین اور میڈیا کی عدم موجودگی میں ہونے والے اس ٹورنامنٹ میں ہندوستان کے 48 مضبوط کھلاڑی اور ریو اولمپک چیمپیئن کیرولائنا مارن اور دنیا کی پہلی نمبر کینٹو موموتا سمیت 33 ممالک کے 228 کھلاڑی شامل ہوں گے۔ یہاں 114 مرد اور 114 خواتین شٹلر ہیں۔ چین بھی ٹورنامنٹ میں حصہ لے گا۔

بی ڈبلیو ایف ورلڈ ٹور سپر 500 ایونٹ کے طور پر درجہ بندی کیا گیا یہ سالانہ ٹورنامنٹ 2020 ٹوکیو اولمپک کھیلوں کے لئے کوالیفائی کرنے والے آخری کوالیفائی فیکیشن ایونٹس میں سے ایک ہے جو دلچسپ ہوگا۔ حالانکہ کووڈ-19 کے معاملے بڑھنے کی وجہ سے ٹورنامنٹ کو حفاظتی پروٹوکول کی پیروی کرتے ہوئے شائقین اور میڈیا کے بغیر بایو ببل (بائیو سیف ماحول) میں منعقد کیا جائے گا۔

برطانیہ سمیت جنوبی افریقہ، برازیل، مشرق وسطی اور یورپی ممالک سے آنے والے تمام کھلاڑیوں اور عہدیداروں کو لازمی طور پر سات روزہ کورنٹائن میں رہنا ہوگا، جس کے لئے انہیں 3 مئی کو دہلی پہنچنا ہوگا، جب کہ دوسرے ممالک کے عہدیدار چھ مئی تک آسکتے ہیں اور انہیں صرف چار دنوں کے لئے کورنٹائن میں رہنا ہوگا۔

حکومت دہلی 3 اور 6 مئی کو کھلاڑیوں اور عہدیداروں کی آمد پر اور بعد میں 9 اور 14 مئی کو آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کرے گی۔ کورنٹائن کے دوران بیڈ منٹن ایسوسی ایشن آف انڈیا (بی اے آئی) تمام شرکاء، افسران اور معاون عملے کو ان کے پسندیدہ کھانا فراہم کرائے جائیں گے۔

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

بین الاقوامی

بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے سیریز کے لئے کشل پریرا سری لنکا کے کپتان مقرر

Published

on

Kashal-Perera

وکٹ کیپر بلے باز کشل پریرا کو بنگلہ دیش کے خلاف تین میچوں کی ون ڈے سیریز کے لئے سری لنکا کا ون ڈے کپتان مقرر کیا گیا ہے، جبکہ کوشل مینڈیس کو 18 رکنی ٹیم میں نائب کپتان نامزد کیا گیا ہے 30 سالہ پریرا نے سری لنکا کے لئے 101 ون ڈے،، 22 ٹیسٹ اور 47 ٹی 20 میں نمائندگی کی ہے۔

وہ دیموتھ کرونارتنے سے ٹیم کی ذمہ داری سنبھالیں گے، جنہوں نے ویسٹ انڈیز کے خلاف گزشتہ ون ڈے سیریز میں ٹیم کی کپتانی کی تھی، جس میں سری لنکا صفر۔

Continue Reading

بین الاقوامی

پاکستان نے زمبابوے کو 0-2 سے کلین سویپ کیا

Published

on

Pakistani-Team

نعمان علی (86 رن پر پانچ وکٹیں) اور شاہیں آفردی (52 رن پر پانچ وکٹیں) کی شاندار گیند بازی سے پاکستان نے زمبابوے کو دوسرے کرکٹ میچ کے چوتھے دن پیر کے روز اننگز اور 147 رن سے شکست دے کر دو میچوں کی سیریز کو 0-2 سے کلین سویپ کر لیا۔ پاکستان نے سیریز کے دونوں ٹسٹ اننگ کے فرق سے جیتے۔

پاکستان نے زمبابوے کو پہلی اننگز میں 132 رن پر نمٹا کر میزبان ٹیم کو فالوآن کھیلنے کے لئے مجبور کیا تھا۔ پاکستان نے اپنی پہلی اننگز آٹھ وکٹ پر 510 رن بناکر ڈکلیئر کی تھی۔ زمبابوے پہلی اننگز میں 378 رن سے پیچھے ہوگیا تھا اور اسے فالوآن کھیلنے کے لئے مجبور ہونا پڑا۔

زمبابوے نے اپنی دوسری اننگز میں نو وکٹ کے نقصان پر 220 رن بنالئے تھے، اور اس کی دوسری اننگز آج 68ویں اوور میں 231 رن پر سمٹ گئی۔ پاکستان نے پہلا ٹسٹ اننگز اور 116 رن سے جیتا تھا، اور دوسرا ٹسٹ بھی اس نے اننگز کے فرق سے جیتا۔

میچ کے چوتھے روز زمبابوے نے بیٹنگ کا آغاز کیا تو اسے پہلی اننگز کے نقصان کو پورا کرنے کے لیے مزید 158 رنز درکار تھے۔ تاہم اس کی آخری جوڑی مجموعی اسکور میں صرف 11 رنز کا اضافہ کر سکی اور پوری ٹیم دوسری اننگز میں 231 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔

لیوک جونگوے کو شاہین آفریدی نے 37 رن پر آوٹ کر کے اپنا پانچواں وکٹ لیا، اور میزبان ٹیم کی دوسری اننگز 231 رن پر سمیٹ دی۔ بلیسنگ مزربانی 24 گیندوں میں چار رن بناکر ناٹ آوٹ رہے۔ جونگوے نے 70 گیندوں میں سات چوکوں کی مدد سے 37 رن بنائے۔ دوسری اننگز میں نعمان علی اور شاہین شاہ آفریدی نے میزبان ٹیم کی بیٹنگ لائن ناکام بنائی اور 5، 5 وکٹیں حاصل کیں۔

پاکستان کی پہلی اننگز مین ڈبل سنچری بنانے والے عابد علی کو پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ دیا گیا، جبکہ حسن علی کو پلیئر آف دی سیریز کا انعام ملا۔
مختصر اسکور:
پاکستان : پہلی اننگ ۔ آٹھ وکٹ پر 510 رن ۔ اننگز ڈکلیئر
زمبابوے : 132 اور 231 رن

Continue Reading

بین الاقوامی

بی سی سی آئی بقیہ آئی پی ایل کامقام طے کرنے کے تعلق سے جلدی میں نہیں

Published

on

BCCI-&-IPL

ملک میں کورونا وبا سے بگڑتے حالات کے درمیان منسوخ کئے گئے آئی پی ایل 2021 کے بقیہ مقابلوں کے دوبارہ انعقاد کے وقت اور مقام کے تعلق سے کافی اندازے لگائے جا رہے ہیں۔ خبریں یہ ہیں کہ کچھ کاونٹیوں نے آئی پی ایل کے بقیہ 31 میچوں کی میزبانی کے لئے دلچسپی دکھائی ہے، جس سے ٹورنامنٹ کے حقیقی اسٹیک ہولڈرز کے درمیان کھلبلی مچ گئی ہے۔

آئی پی ایل کے اس سیزن کو مکمل کرنے کے لئے انڈین کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) یقیناً ستمبر میں ایک کھڑکی تلاش کر رہا ہے، لیکن وہ انعقاد کا مقام طے کرنے کی جلدی میں نہیں ہے۔ اس میں بھی کوئی دورائے نہیں ہیں، کہ بی سی سی آئی کو آگے چل کر آئی سی سی (انٹرنیشنل کرکٹ کونسل) کے ساتھ معاہدہ کرنا ہی ہوگا، تاکہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے تعلق سے دونوں کے درمیان کوئی ٹکراونہ ہو، جو آئی پی ایل اور ٹی-20 عالمی کپ دونوں ٹورنامنٹ کے لئے سب سے اچھا ممکنہ انعقاد کا مقام ہو سکتا ہے۔

آئی پی ایل کے انگلینڈ میں منعقد ہونے کی خبروں کے تعلق سے فی الحال انگلینڈ اینڈویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) کے حکام نے کوئی مثبت ردعمل نہیں دیا ہے، لیکن انگلینڈ کے ایک کاونٹی کلب ہیمپشائر کے مالک راڈ برانسگرو نے اس پر حیرانی کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا، ’’میں نے اس بارے میں سنا ہے لیکن یقین نہیں کر پا رہا ہوں کہ یہ کیسے ہو سکتا ہے۔ موجودہ انتظام کے مطابق یہاں آئی پی ایل کی میزبانی کرنا غیر قانونی ہوگا۔ لندن کے میریلبون کرکٹ کلب نے بھی اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

آئی سی سی کی چیف ایگزیکٹو کمیٹی نے جمعرات کو ورچوئل طریقے سے ایک میٹنگ کے دوران آئی پی ایل کے لئے انگلینڈ ایک ممکنہ مقام ہونے کے بارے میں تو نہیں، لیکن آئی سی سی کیلنڈر پوسٹ 2023 پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com