Connect with us
Sunday,07-March-2021
تازہ خبریں

(جنرل (عام

موجودہ الیکشن ہندو بھگوان بجرنگ بلی اورعلی کے درمیان ہورہا ہے : یوگی

Published

on

:بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) نے سنیچر کو دعوی کیا کہ ایک منظم سازش کے تحت بجرنگ بلی اور علی کے پیروکاروں کے درمیان منافرت پیدا کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔
قابل ذکر ہے کہ مایاوتی کا یہ بیان اترپردیش کے وزیراعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے منگل کو دئے گئے اس بیان کے بعد میں آیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ موجودہ الیکشن ہندو بھگوان بجرنگ بلی اورعلی کے درمیان ہورہا ہے۔ مایاوتی نے اپنے ٹوئٹ میں ملک کے شہریوں کو رام نوی کی مبارک باد دیتے ہوئے خوشحال اور امن و امان کی دعا کی۔
بی ایس پی سپریمو نے کہا’’ جب لوگ بھگوان رام کے نظریات کو یاد کررہے ایسے موقع پر کچھ لوگوں نے بجرنگ بلی اورعلی کے نام پر منافرت پیدا کرکے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کی گئی تھی۔
پنجاب میں جلیانوالہ باغ سانحہ کی برسی پر مایاوتی نے شہداء کو خراج عقیدت پیش کی اور ان کے کنبہ کے تئیں اپنی ہمدردی کر اظہار کیا۔

(جنرل (عام

مالیگاؤں سمیت پورے ناسک ضلع میں کورونا کے پھیلتے سائے سے ڈر اور خوف کا ماحول مالیگاؤں کارپوریشن کی جانب سے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کا اعلان

Published

on

مالیگاؤں (خیال اثر) کورونا کی دوسری یلغار نے ہنگامہ برپا کردیا ہے. چہار جانب کورونا متاثرین نظر آنے لگے ہیں. تازہ ترین اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ ریاست مہاراشٹر میں روزانہ 8 ہزار سے زائد افراد کورونا کا شکار ہورہے ہیں. ناسک ضلع بھی کورونا سے مبرا نہیں ہے کیونکہ گذشتہ دنوں 380 کورونا متاثرین سامنے آئے ہیں جن میں سے کورونائی عفریت نے پانچ مریضوں کو دبوچ کر موت کے حوالے کردیا حالانکہ 362 کورونا متاثرین صحت یاب بھی ہوئے ہیں. ناسک ضلع میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھتے بڑھتے 3400 سے زائد ہو گئی ہے اور اس میں روز بروز اضافہ بھی ہوتا جارہا ہے. ناسک ضلع کے مالیگاؤں میں بھی کورونا کے تانڈو نے خوف و ہراس پھیلا رکھا ہے کیونکہ گذشتہ دنوں 48 کورونا متاثرین مالیگاؤں میں سامنے آئے ہیں. ناسک شہر میں 222,ناسک دیہی حلقہ میں 90 افراد کورونا سے متاثر ہوئے ہیں. دیکھا جائے تو ناسک ضلع میں اب تک کورونا نے ایک لاکھ 24 ہزار 687 افراد کو دبوچ رکھا ہے جبکہ ایک لاکھ 19 ہزار 126 کورونا متاثرین نے صحت یابی بھی پائی ہے.
کورونا کی پیش قدمی کو دیکھتے ہوئے مالیگاؤں کارپوریشن کی جانب سے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کے لئے سختی کی جارہی ہے. ایک اعلان کے مطابق عوامی مقامات پر بغیر ماسک کے نظر آنے والے افراد سے پولیس محمکہ اور میونسپل ملازمین ایک ہزار روپیہ جرمانہ وصول کریں گے. بہت پہلے ریاستی وزیر اعلی نے اعلان کیا تھاکہ کورونا کی دوسری لہر سونامی ثابت ہوگی آج کورونائی یلغار نے ان کا کہا سچ ثابت کردیا ہے. مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد یقیناً کسی سونامی سے کم نہیں. روز بروز شائع ہونے والے اعداد و شمار نے ایک بار پھر شہریان میں ڈر اور خوف کا ماحول پیدا کردیا ہے. کورونا کی دوبارہ پیش قدمی نے ملازمت پیشہ افراد کو ایک بار پھر بھکمری کے دہانوں تک پہنچا کر انھیں مجبور کردیا ہے کہ وہ ایک بار پھر گھر واپسی کے لئے رخت سفر باندھ لیں. ساتھ ہی معاشی و تجارتی نظام جو آہستہ آہستہ راہ راست پر آتا جارہا تھا وہ بھی دوبارہ خسارے سے دوچار ہوتا دکھائی دے رہا ہے ایسے حالات میں شہریان کو بھی چاہیے کہ وہ تمام تر احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے نہ صرف خود کو محفوظ رکھیں بلکہ اپنے اہل خانہ کو بھی اس خطرناک بیماری کے شکنجے میں آنے سے بچا لے جائیں ورنہ کورونائی عفریت انھیں انتہائی بے دردی سے نگل جائے گا. شہریان عوامی مقامات پر بھیڑ میں جانے سے گریز کرتے ہوئے مناسب فاصلہ برقرار رکھیں اور بغیر ماسک لائے عوامی مقامات پر جانے سے پرہز کریں یہی احتیاطی تدابیر کورونا کو شکست فاش دینے کا سبب بن سکتی ہے.

Continue Reading

(جنرل (عام

بھیونڈی میں نہیں رک رہے ہیں آتشزدگی کے واقعات ، آتشزدگی کے باعث تین پاورلوم کارخانے جل کر خاک،کوئی جانی نقصان نہیں

Published

on

fire-bhiwandi

بھیونڈی: (نامہ نگار ) بھیونڈی میں آتشزدگی کے واقعات رکنے کے بجائے روز بروز بڑھتے جارہے ہیں۔ اس ہفتے پیر کے روز سے تقریباً روزانہ ہی آگزنی کے واقعات پیش ہورہے ہیں۔ گزشتہ پانچ دنوں میں آتش زنی کے 10 واقعات پیش ہوچکے ہیں۔ جس میں 6 پاورلوم کارخانے جل کر خاک ہوچکے ہیں۔ رواں مالی سال کے آخری مہینے مارچ میں آتش زنی کے واقعات میں کچھ زیادہ ہی اضافہ ہوا ہے۔ جسے مشکوک نظروں سے دیکھا جارہا ہے کہ کہیں انشورنس کے دعوے کے لئے تو نہیں مذکورہ آتشزدگی کے واقعات رونما ہورہے ہیں یا کہیں یہ کوئی منظم منصوبہ بندی کا حصہ تو نہیں؟ اس سے قبل بھی دھامنکرناکہ کے قریب آمنہ کمپاؤنڈ میں بھی آتشزدگی کے باعث 3 پاورلوم کارخانے جل کر خاک ہوگئے تھے۔

نارپولی واقع سونی بائی کمپاؤنڈ میں ایک جدید ترین سولجر پاورلوم کارخانہ ہے۔ جس میں جمعہ کے روز نیم شب تقریباً ڈھائی بجے اچانک آگ لگ گئی۔ کارخانے میں خام مال کا ذخیرہ ہونے کی وجہ سے دیکھتے ہی دیکھتے آگ نے شدید رخ اختیار کرلیا۔ جس کی وجہ سے اس کے قریب تین دیگر پاورلوم کارخانوں کو بھی آگ نے اپنی زد میں لے لیا تھا۔ کارخانے میں آگ لگتے ہی اس میں کام کرنے والے مزدور اپنی جان بچا کر باہر نکل گئے۔ جس کی وجہ سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ لیکن کارخانے میں لگی آگ اتنی بھیانک تھی کہ اس کی لپٹوں کے سبب چھت میں لگا سیمنٹ کا پترا جل کر نیچے گر رہا تھا۔ جس کی وجہ سے کارخانے میں رکھے یارن اور خام مال کے ساتھ پوری مشینری جل کر خاک ہوگئی۔ آتشزدگی کی اطلاع موصول ہوتے ہی فائر بریگیڈ کی دو گاڑیاں موقع پر پہنچ گئیں تھیں۔ فائر بریگیڈ کی ٹیم کے جوانوں کی تقریباً پانچ گھنٹے کی سخت مشقت کے بعد آگ پر قابو پایا گیا تھا۔ لیکن تب تک تینوں کارخانے جل کر خاکستر ہوگئے تھے۔

جائے وقوع پر پہنچنے کے لئے راستہ کافی تنگ ہونے کی وجہ سے فائر بریگیڈ کی ٹیم کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا۔ کارخانے کی دیوار میں سوراخ کرکے فائر بریگیڈ کی ٹیم کے جوانوں نے آگ بجھانے کی کوشش کی۔ کارخانے میں آگ لگنے کی اصل وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے۔ بھوئیواڑہ پولیس نے آتشزدگی کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

Continue Reading

(جنرل (عام

” خواتین کی صلاحیتیں اجاگر کرنا وقت کی ضرورت “ امیر جماعت اسلامی ہند نے خواتین کے ای میگزین کا اجرا کیا

Published

on

keynote

نئی دہلی: (پریس ریلیز)
جماعت اسلامی ہند کے شعبہ خواتین کی نگرانی میں شائع ہونے والا اردو ماہنامہ (ای میگزن) ”ہادیہ“ اور انگریزی ماہنامہ (ای میگزن) ”اَورا“ کا رسم اجرا جماعت کے مرکز میں عمل میں آیا۔ ”ہادیہ“ کے اس پروگرام میں امیر جماعت اسلامی ہند سید سعادت اللہ حسینی، اسلامی معاشرہ کے سکریٹری رضی الاسلام ندوی، شعبہ خواتین کی معاون سکریٹری رحمت النساءسمیت متعدد معروف و مشہور خواتین نے شرکت کیں۔ امیر جماعت نے اپنے کلیدی خطبے میں کہا کہ اس ماہنامہ کے مطالعہ سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہ خواتین میں بیداری لانے، دینی تربیت پیدا کرنے اوران کی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ خواتین میں قدرت نے بے پناہ صلاحیتیں رکھی ہیں۔ مگران کی صلاحیتوں کا صحیح طور پر استعمال نہیں ہورہا ہے ، خاص طور پر مسلم معاشرے میں۔

عام طور پر انہیں گھر گرہستی سبھالنے کی حد تک محدود رکھا جاتا ہے جبکہ وہ ہر میدان میں بے مثال کارنامہ انجام دے سکتی ہیں۔ ہمیں حضرت عائشہؓ کے کارناموں سے سبق لینا چاہئے جنہوں نے تمام شعبہ ہائے حیات میں اہم کارنامہ انجام دیا۔ ہمیں توقع ہے کہ یہ ماہنامہ خواتین کی نشاة ثانیہ کا ذریعہ بنے گا اور اس کے ذریعہ خواتین کی ایک باصلاحیت ٹیم تیار ہوگی۔ پروگرام کو شہناز شاذی، محترمہ زینت اختر،محترمہ شہناز بیگم، ملک کی معروف مصنفہ جاویدہ بیگم نے خطاب کیا۔ اس موقع پر میگزن کی ایڈیٹر مبشرہ فردوس نے کہا کہ آج سوشل میڈیا انسانی روابط کا اہم ذریعہ ہے۔ اگر اس کا استعمال تعمیر ی ہو تو انسانیت کے لئے مفید ہے اور اگر اس کا رخ تخریبی کردیا گیا تو نقصان دہ ہے۔ہماری کوشش تعمیری ہونی چاہئے اور اس رسالے کا مقصد اسی تعمیری کوشش کو عمل میں لانا ہے۔اس کے بعد شعبہ خواتین کی نیشنل سکریٹری عطیہ صدیقہ نے کہاکہ خواتین کے اندر جو صلاحیتیں ہیں، ان صلاحیتوں کو مثبت طریقے پر ابھارنے کی ضرورت ہے۔

ڈیجیٹل دور میں مثبت افکار پر مبنی یہ رسالہ بروقت اٹھایا گیا ایک اہم قدم ہے جس میں قارئین کے لئے ہمہ جہت مواد فراہم کرنے کی کوشش برقرار رکھی جائے گی۔اس رسالے میں دنیاوی اور دینی امور سے متعلق امور شامل ہوں گے۔ اس موقع پر فاطمہ تنویر، صفیہ یاسمین اور سعدیہ یاسمین نے بھی شرکت کی۔ میگزن کو اس لنک پر دیکھا جاسکتا ہے: haadiya.in www۔ اس کے بعد انگریزی ماہنامہ(ای میگزن) ” Aura “ کے پروگرام میں امیر جماعت اسلامی ہند سمیت عثمانیہ یورنیورسٹی کی اسکالر اور ماہنامہ’ اَورا‘ کی ایڈیٹر عائشہ سلطانہ، چیف ایڈیٹر رحمت النساء، چیف گیسٹ ڈاکٹر سیلویا کرپاگام، جے این یو کی معاون پروفیسر ڈاکٹر غزالہ جمیل نے خطاب کیا اور سب نے اس کی اہمیت پر روشنی ڈالی ۔پروگرام میں انگریزی ماہنامہ کی رونمائی بھی کی گئی اور پھر پالٹیکس آف ہیلتھ اینڈ جینڈر کے عنوان پر پینل ڈسکشن منعقد ہوا جس میں ڈاکٹر شیلویا گرپاگام ، شرناس ماتھو، منٹل ہیلتھ کاؤنسلر حمیدہ راشدنے شرکت کی اور پروگرام کا اختتام شیاما ایس کے شکریہ پر ہوا۔ اسے لنک www.auramag.in پر دیکھا جاسکتا ہے۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com