Connect with us
Wednesday,12-May-2021

مہاراشٹر

مہاراشٹر: جمعیۃ علماء کی طرف سے مساجد میں نمازِ تراویح کی اجازت کیلئے بمبئی ہائی کورٹ میں عرضی داخل

Published

on

bombayhighcourt

bombayhighcourt

ممبئی(نامہ نگار)مہاراشٹر میں مسلمانوں کو ماہ رمضان میں مساجد میں عبادت اور نمازِ تراویح کے لئے لاک ڈاؤن سے رعایت کے لیے بمبئی ہائی کورٹ میں مفاد عامہ کے تحت ایک عرضی دائر کی گئی ہے۔ سینئر ایڈوکیٹ افروز صدیقی کے توسط سے داخل پٹیشن میں تحریر کیا گیا ہے کہ ماہ رمضان کی آمد آمد ہے اور مسلمانوں کو ایک بار پھر مساجد میں عبادت کرنے سے محروم رکھا جارہا ہے جس سے مسلمانوں میں بے چینی اور سخت اضطراب کا ماحول ہے۔

رمضان میں نماز تراویح کی خاص اہمیت ہے،نماز تراویح میں کم از کم ایک کلام پاک کا ختم کرنا سنت مؤکدہ ہے۔عرضداشت میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ مساجد میں حکومت کی جانب سے جاری کی گئی ہدایت پر سختی سے عمل کیا جارہا تھا، لیکن ایک بار پھر حکومت نے تمام مساجد اور دیگر مذہبی مقامات کو بند کرنے کا حکم جاری کیا ہے جس سے مسلمانوں میں شدید بے چینی ہے۔ اگرحکومت انتخابی جلسوں اور ریلیوں کے لئے 200 لوگوں کی اجازت اور شادی بیاہ کے لیے 50 لوگوں کی شرکت اجازت دے سکتی ہے ،تو مساجد میں نماز پڑھنے کے لیے لوگوں کو اجازت کیوں نہیں دے سکتی؟
پٹیشن میں مزید لکھا گیا ہے رمضان المبارک کے دوران مساجد سے مساکین اور فقیروں کی مدد کی جاتی ہے، نمازی حضرات دل کھول کر خیرات کرتے ہیں جس سے معاشی طور پر پریشان حال افراد کی داد رسی ہوجاتی ہے، لہٰذا مساجد بند رکھنے سے ایسے ہزاروں لوگوں کو پریشانیاں لاحق ہوسکتی ہیں۔عرضداشت میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ رمضان المبارک میں کچھ لوگ نجی مقامات پر تراویح کی نماز کا اہتمام کرتے ہیں جس میں مشکل سے بیس سے پچیس افراد شرکت کرتے ہیں، لہٰذا حکومت محدود لوگوں کو مساجد اور نجی مقامات پر نماز ادا کرنے کی اجازت دے سکتی ہے۔
اس سے قبل سپریم کورٹ نے جین تہوار کے لیے خصوصی اجازت دی تھی۔ عرضداشت میں مزید لکھا گیا ہے کہ پوری ریاست سے عوام کی جانب سے حکومت کو میمورنڈم اور درخواست دی گئی ہے کہ ماہ رمضان میں مساجد کو عبادت کے لیے کھولنے کی اجازت دی جائے، تمام احتیاطی تدابیر کا خصوصی خیال رکھا جائے گا اورشوشل ڈسٹنسنگ(سماجی فاصلہ) کا خصوصی خیال رکھا جائے گا۔
عرضداشت میں عدالت سے گذارش کی گئی ہے کہ حالات کے مد نظر 13 اپریل سے 13مئی تک مسلمانوں کو مساجد میں نماز ادا کرنے کی اجازت دی جائے۔واضح ہو کہ جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے جنرل سکریٹری مولانا حلیم اللہ قاسمی نے بمبئی ہائی کورٹ میں پٹیشن داخل کی ہے، جس پر اگلے ہفتہ کسی دن سماعت ہوسکتی ہے۔

جرم

مراٹھواڑہ میں کورونا کے 4717 نئے معاملے، 128 افراد کی موت

Published

on

coronapositive

مہاراشٹر کے مراٹھواڑا خطے میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران، کووڈ-19 کے 4717 نئے کیس رپورٹ ہوئے اور 128 مریضوں کی موت ہوئی ہے۔

صحت کے عہدیداروں نے بدھ کے روز یہ اطلاع دی۔ تمام ضلعی ہیڈ کوارٹرز سے یونیوارتا کی جانب سے یکجیا کی گئیں تفصیلات کے مطابق خطے کے 8 ضلعوں میں سے لاتور سب سے زیادہ متاثر رہا۔ اس یہاں اس دوران، کورونا کے 592 نئے کیس معاملے سامنے آئے اور 30 ​​مریضوں کی موت ہوگئی۔ اس کے بعد، بیڑ میں 1258 نئے کیسز اور 21 اموات، پربھنی میں 613 نئے کیسز اور 18 کی موت، اورنگ آباد میں 748 نئے کیسز اور 17 اموات، نانڈیڑ میں 290 نئے کیسز اور 14 اموات، عثمان آباد میں 676 نئے کیسز اور 11 اموات جالنا میں 374 نئے معاملے اور 10 اموات اور ہنگولی میں 140 نئے معاملے اور سات مریض فوت ہوئے۔

Continue Reading

مہاراشٹر

ممبئی میں کورونا سے اب تک 111 پولیس اہلکار ہلاک

Published

on

police

ابھی تک ، ممبئی پولیس کے 111 پولیس اہلکار کورونا انفیکشن کی وجہ سے ہلاک ہوگئے ہیں۔ یہ معلومات ممبئی پولیس آفس سے موصول ہوئی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق ، ان پولیس اہلکاروں میں زیادہ تر وہی لوگ ہیں جنہوں نے حساس علاقوں مثلا کنٹونمنٹ زون میں ڈیوٹی کی تھی۔ 75 سے زائد پولیس اہلکار زیادہ عمر کے بتائے جارہے ہیں ، جو کورونا پر فتح حاصل نہیں کرسکے۔ تاہم ، پولیس ترجمان ڈی سی پی چیتنیا ایس نے بتایا کہ تمام تھانوں کو فی پولیس اسٹیشن کے لئے 2 لاکھ روپے دیئے گئے ہیں ، تاکہ
اسٹیشن انچارج کورونا سے وابستہ ضروری مواد خرید سکے۔

اس کے علاوہ 50 سال سے زائد عمر کے پولیس اہلکاروں کو مسلسل ڈیوٹی کرنے کے بعد 24 گھنٹے کی چھٹی دی جارہی ہے۔ گھر سے دور رہنے والے پولیس اہلکاروں کو اضافی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ کوویڈ وائرس کی جانچ کے لئے پولیس کوویڈ جانچ سینٹر ، کوویڈ ویکسینیشن سینٹر اور کوویڈ کوارٹنائن سینٹر قائم کیا گیا ہے۔ 2020 میں 139 ، 2019 میں 144 ، 2018 میں 129 پولیس اہلکار مختلف بیماریوں کے سبب فوت ہوگئے ہیں۔ ان میں جگر ، گردے ، دل کا دورہ اور ذیابیطس جیسی بیماریاں شامل ہیں۔ اگرچہ ممبئی پولیس سروس میں 40،470 پولیس اہلکار مقرر کیے گئے ہیں ، فی الحال 33،732 پولیس اہلکار خدمات انجام دے رہے ہیں۔ 3884 پولیس آفیسر ہیں ، جن میں سے 1706 پولیس افسران ابھی تک خالی ہیں۔

فی الحال 3725 پولیس اہلکار کورونا کے مرض میں مبتلا ہیں ، جبکہ 11 ہزار سے زیادہ پولا اہلکار کسی نہ کسی کوویڈ سینٹرس پر کوارٹنائن ہے۔ پولیس اہلکاروں میں ایکٹیو معاملات کی تعداد 412 ہے ، جبکہ 111 پولیس اہلکار کورونا کے خلاف جنگ میں شکست کھا چکے ہیں۔ پوری ریاست کے بارے میں بات کریں تو ، اب تک کورونا سے 427 پولیس اہلکار اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ پولیس کمشنر ہیمنت ناگرالے نے کہا کہ ممبئی پولیس کورونا جنگجو پولیس اہلکاروں کی جان بچانے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے ، تاکہ پولیس اہلکار محفوظ رہیں۔

Continue Reading

جرم

مراٹھواڑہ خطے میں 5،187 نئے کورونا کیسز، 149 اموات درج

Published

on

Corona-...

مہاراشٹر کے مراٹھواڑا خطے کے آٹھ اضلاع میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے سب سے زائد 5،187 نئے کیسز سامنے آئے، اور 149 افراد کی موت ہو گئی۔ طبی حکام نے یہ اطلاع دی۔

تمام ضلع صدر مقامات سے یو این آئی کی جانب سے جمع کئے گئے اعداد وشمار کے مطابق خطے کے آٹھ اضلاع میں سے ضلع بیڈ سب سے زیادہ متاثر رہا ہے، جہاں 1273 نئے کیسز درج کئے گئے، اور 29 افراد کی موت ہوگئی، اس کے بعد لاتور میں 953 کیسز اور 29 افراد کی موت، اورنگ آباد میں 759 کیسز اور 22 اموات، ناندیڑ میں 337 نئے کیسز اور 19 افراد جاں بحق ہوئے، جبکہ جالنا میں 556 کیسز اور 16 اموات، پربھنی میں 462 کیسز اور 12 مریض فوت ہوئے، عثمان آباد میں 712 کیسز اور 8 لوگوں کی جان گئی اور ہنگولی میں 131 کیسز اور 5 افراد کی موت ہو گئی۔

دریں اثنا گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریاست بھرمیں کووڈ-19 کے 4840 نئے کیسز سامنے آنے سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 51،01،737 ہوگئی۔ ریاست میں مزید 572 مریضوں کی موت ہونے سے مرنے والوں کی تعداد 75،809 ہوگئی ہے۔

اس دوران ریاست میں ریکارڈ 60،223 مریضوں کے صحتیاب ہونے سے کورونا سے نجات پانے والوں کی مجموعی تعداد 44،07،818 ہوگئی۔ ریاست میں شفایابی کی شرح فی الحال 86.4 فیصد ہے، اور شرح اموات 1.49 فیصد ہے۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com