Connect with us
Wednesday,30-September-2020

جرم

مالیگاؤں میں جنونی بھیڑ نے پھر کیا مسلم نوجوانوں پر جان لیوا حملہ، پولس نے کیا مآب لنچنگ سے انکار، 3 افراد پولس کی گرفت میں مزید گرفتاریاں باقی

Published

on

کرائم اسٹوری : وفا ناہید
اس وقت پورے ملک حالات خراب چل رہے ہیں. 4 ماہ تک کورونا نے سب اس قدر خود میں مصروف رکھا کہ کورونا اور اس سے ہونے والی اموات , لاک ڈاؤن, تالی بجانا , دیا جلانا اور کورونا کو مسلمانوں جوڑ کر تبلیغی جماعت کو نشانہ بنانا ہی اس کا مصرف تھا. اب جب کہ کورونا 5 ماہ مکمل کرکے چھٹے ماہ قدم رکھ چکا ہے وہیں عوام کے دلوں سے کورونا کا خوف تھوڑا کم ہوا اور غیرقانونی سرگرمیوں کا آغاز ہوگیا. کوارٹنائن سینٹر میں کووڈ پیشنٹ کی آبروریزی سے لے کر قتل و خودکشی اور انکاؤنٹر کے بعد شرپسندوں کا پسندیدہ مشغلہ مآب لنچنگ تک پہنچ گیا. یوں تو لاک ڈاؤن میں چھوٹے موٹے کرائم کا سلسلہ جاری تھا مگر ادھر گذشتہ کچھ دنوں سے مالیگاؤں کے مسلم نوجوانوں کو ہجومی تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے. ابھی پچھلے دنوں جلگاؤں ضلع کے پارولہ شہر میں کچھ نوجوانوں کی مآب لنچنگ کا ویڈیو شوشل میڈیا پر وائرل ہوا تھا. جس کے بعد شہر میں تناؤ کا ماحول پیدا ہوگیا تھا. وہ تو مالیگاؤں کے مسلمان صبر و جمیل کا پیکر ہے لہذا کوئی ناخوشگوار واقعہ رونما نہیں ہوا. اس واردات کی ابھی مذمت ہی جاری تھی کل یعنی عیدالاضحیٰ کے دن مالیگاؤں شہر تعلقہ پولس اسٹیشن کی حد میں دوبارہ کچھ مسلم نوجوانوں کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا. اس واردات کے تعلق سے جب نمائندۂ ممبئی پریس نے مالیگاؤں شہر تعلقہ پولس اسٹیشن کے پی آئی نریندر بھدانے سے بات کی تو انہوں نے بتایا کہ مالیگاؤں کے 4 افراد آٹو رکشا سے جارہے تھے . اتنے میں جو کہ ایک بائی اپنی بھیڑ بکریاں لے کر جارہی تھیں , ان نوجوانوں کے ہارن بجانے کے بعد بھی اس نے راستہ نہیں دیا. جس کی وجہ سے وہ مشتعل ہوگئے اور انہوں نے گالی گلوچ کی. جس کے بعد اس بائی کے افراد خانہ نے بائیک کے ذریعہ ان نوجوانوں کی رکشا کا تعاقب کیا اور ان کے ساتھ مار پیٹ کی. پی آئی بھدانے کے مطابق یہ مآب لنچنگ نہیں تھی. بلکہ بات یہ تھی کہ ان لوگوں نے ان کے گھر والوں کے ساتھ گالی گلوچ کی تھی. بائیک سے آٹو رکشا کا پیچھا کیا گیا. جب وہ نوجوان اپنی جاں بچا کر بھاگنے لگے تو ان پر پتھراؤ کیا. بڑے بڑے پتھر پھینکے گئے جس کی وجہ ایک نوجوان زخمی ہوگیا اور ساتھ ہی ان مشتعل افراد نے ان کی آٹو رکشا MH41 AT 0757 کو بھی پتھر سے توڑ پھوڑ دیا . پی آئی بھدانے نے مزید بتایا کہ ہم نے اس واردات میں 3 افراد کو حراست میں لیا ہے. مزید گرفتاریاں ہونی باقی ہیں. اس کیس کی تحقیقات ابھی مکمل نہیں ہوئی ہے. ان افراد پر تعزیرات ہند کی دفعات 324 اور 341 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے.
اس واردات کا بھی ویڈیو وائرل ہوا جس میں صاف دکھائی دے رہا ہے بڑے بڑے پتھروں سے آٹو رکشا کی توڑ پھوڑ کی گئی . کہا جارہا ہے کہ جب مسلم نوجوان ان شرپسندوں سے جان بظاہر بھاگ رہے تھے. تب ان پر پتھر برسائے گئے. جنونی ہجوم کی طرف سے یہ ایک جان لیوا حملہ تھا. اگر یہ مسلم نوجوان خدانخواستہ ان کے ہاتھ لگ جاتے تو شاید ان کی لاشیں گھر آتیں. ایک معمولی تکرار کو فرقہ وارانہ رنگ دے کر شہر کا ماحول خراب کرنے کی کوشش کی گئی. اس کے باوجود پولس اسے مآب لنچنگ ماننے کو تیار نہیں. اگر ان نوجوانوں کی غلطی تھی تو پولس سے رجوع کیا جاسکتا تھا. قانون ہاتھ میں لے کر اس طرح تانڈو کرنے کی ضرورت نہیں تھی.

جرم

ہماچل میں کورونا کے 66 نئے معاملے،کل مریض 14523 ہوئے، 178کی موت

Published

on

VIRUS

ہماچل میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا انفیکشن کے 66 نئے معاملے آنے کے ساتھ ریاست میں اس وبا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 14523 ہوگئی ہے اور ان میں سے 10866 کے صحت یاب ہونے کے بعد سرگرم معاملات 3454 ہیں۔ریاست میں کورونا کے سبب اب تک 178 اموات ہوئی ہیں۔
ریاست کے محکمہ صحت وخاندانی بہبود کی جانب سے آج یہاں جاری اعدادوشمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 259 کورونا مریض صحت یاب ہوئے ہیں۔ان میں شملہ کے سب سے زیادہ 99، اونہ 71، کانگڑا 36، بلاس پور 18، سرمور 14، لاہول اسپیتی 12، چمبا پانچ اور ہمیر ہور میں چار مریض شفایاب ہوئے۔
وہیں منگل کو تین کورونا مریضوں کی موت ہوئی۔منڈی کے نیرچیک میڈیکل کالج میں بلاس پور کے لکھن پور رہائشی 73 سالہ بزرگ خاتون کی موت ہوگئی۔خاتون ذیابیطس کے علاوہ دیگر کئی بیماریوں میں مبتلا تھی۔اس کے علاوہ کانگڑا میں مزید دو مریض جاں بحق ہوئے جس سے اس ضلع میں کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر 44 ہوگئی ہے۔وہیں شملہ 32، سولن 26، مندی 25، سرمور 13، اونہ 12، چمبا 10، ہمیرپور سات، کلو چھ، کنور دو اور بلاس پور ضلع میں کورونا سے ایک موت ہوئی ہے۔

Continue Reading

جرم

ممبئی میں منشیات سمگلر گرفتار، 14.4 لاکھ روپے مالیت کا ایم ڈی ضبط

Published

on

Heroine-Drug

ممبئی پولیس نے گوریگاؤں نواحی علاقے میں منشیات کے ایک 22 سالہ اسمگلر کو گرفتار کیا اور اس کے پاس سے 14.40 لاکھ روپے مالیت کا ممنوعہ نشہ آور مواد میفڈروون (ایم ڈی) برآمد کیا۔ ایک اہلکار نے یہ اطلاع دی۔ اس افسر نے بتایا کہ خفیہ معلومات کی بنیاد پر، پیر کی شب کرائم برانچ نے علاقے میں ایک جال بچھایا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ملزم نور محمد محبوب خان رات 9.20 بجے فلم سٹی روڈ پہنچا اور کسی کے منتظر روڈ پر کھڑا ہوا تھا۔ اس کے عمل مشکوک لگ رہے تھے۔ افسر نے بتایا کہ پولیس ٹیم آگے بڑھنے سے پہلے ہی اس کے پاس پہنچی۔ تلاشی کے دوران اس کے پاس سے 480 گرام میفڈروون ملا۔
میفڈرون کو (MD) ایم ڈی کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ یہ ایک مصنوعی مادہ ہے۔ افسر نے بتایا کہ ملزم کرلا کے علاقے کمانی کا رہائشی ہے، اس نے دوران تفتیش اعتراف کیا ہے کہ وہ اپنے موکل کو منشیات سپلائی کرنے آیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ وہ قتل کی کوشش سمیت کم سے کم 10 سنگین جرائم میں ملوث رہا ہے۔
ساتھ ہی وہ نواحی گھاٹکوپر میں دو مجرمانہ مقدمات میں بھی مطلوب ہے۔ افسر نے بتایا کہ پولیس یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ ملزم ممنوعہ ادویہ کہاں سے خریدا تھا اور یہ کس کو فراہم کیا جانا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ممبئی کی ایک عدالت نے ملزم کو 3 اکتوبر تک پولیس تحویل میں بھیج دیا ہے۔

Continue Reading

جرم

گورنر سے ملی پائل گوش، انوراگ کشیپ پر فوری کارروائی کا مطالبہ

Published

on

فلمساز انوراگ کشیپ پر عصمت دری اور جنسی استحصال کا الزام عائد کرنے والی اداکارہ پائل گھوش نے منگل 29 ستمبر کو مہاراشٹر کے گورنر بھگت سنگھ کوشیاری سے ملاقات کی۔ پائل نے اپنی میٹنگ میں گورنر سے انوراگ کشیپ پر فوری کارروائی کا مطالبہ کیا۔ اس کے ساتھ ہی، پائل نے اپنی جان کو بھی خطرہ قرار دیتے ہوئے اپنے لئے وائی زمرے کے تحفظ کا مطالبہ کیا۔
گورنر بھگت سنگھ کوشیاری سے ملاقات کے بعد، پائل نے کہا، “گورنر سے میری ملاقات نتیجہ خیز رہی۔ میں نے انوراگ کشیپ پر فوری کارروائی کرنے کو کہا۔ انہوں نے مزید کارروائی میں بھی مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ پائل کے ساتھ اس ملاقات میں ان کے وکیل اور آر پی آئی رہنما رامداس آٹھاوالے بھی موجود تھے۔


پائل کے وکیل نے اس ملاقات کے بعد بتایا کہ اداکارہ ریچا چڈھا نے پائل کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا ہے جس کے لئے ان کے خلاف شکایت درج کی گئی ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ریچا چڈھا نے پائل کو ڈرانے کے لئے نوٹس بھجوایا ہے تاکہ وہ انوراگ کشیپ کے خلاف مقدمہ درج نہ کریں۔ وضاحت کریں کہ پائل نے اپنے الزامات میں انوراگ کشیپ نے مبینہ طور پر کہا تھا کہ ریچا چڈھا، ماہی گیل اور ہما ​​قریشی جیسی اداکارائیں ایک موقع پر ان کے پاس آئیں۔


اس سے قبل پیر کے روز، پائل گھوش اور آر پی آئی کے رہنما رامداس نے پیر کو انوراگ کشیپ کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے مشترکہ پریس کانفرنس کی تھی۔انوراگ پر جنسی بدکاری اور عصمت دری کا الزام لگانے والی پائل نے ان کی جان کو خطرہ میں ڈال دیا تھا۔ کہا اس دوران پائل نے اپنے لئے سیکیورٹی کا مطالبہ کرنے کے بارے میں بھی بات کی۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com