Connect with us
Wednesday,12-May-2021

ممبئی پریس خصوصی خبر

مسجدیں کسی بھی میں صورت بند نہیں کی جائے گی, رمضان میں تراویح اور عید پر دوگانہ کھلے میدان میں ادا کرنے اعلان

Published

on

مالیگاؤں (خیال اثر) ہمیں حکومت کی عائد شدہ تمام پابندیوں پر عمل بھی کرنا ہے اور پنج وقتہ نمازوں کا اہتمام بھی مسجدوں میں ہی کرنا ہے کیونکہ ہم نا تو مساجد سے دور رہ سکتے ہیں نہ ہی خدا کی عبادت سے کنارہ کش ہو سکتے ہیں. عبادت و تلاوت ہمارا اپنا حق ہے. آج اگر حکومت ہماری مساجد کو بند کرنے کے لئے نوٹس تقسیم کررہی ہے تو ہم اس پر قطعی عمل کرنے کے لئے تیار نہیں کیونکہ ہم کسی بھی لمحہ خدا کی عبادت کرنانہیں چھوڑ سکتے چاہیے جتنی خطرناک بیماری پھیل جائے دعا ہی سب سے کارگر ہتھیار ثابت ہوتی رہی ہے. مشہور ہے کہ عبادت و ریاضت اور دعاؤں سے بلائیں پسپا ہو جاتی ہیں. ہم کسی بھی پل نماز اور دعاؤں سے غافل نہیں رہ سکتے. پنج وقتہ نمازوں کی ادائیگی ہمارا ایمانی فریضہ ہے. اگر آج حکومت زبردستی مسجدوں کو پابند بنا رہی ہے کہ پانچ سے زیادہ افراد نماز کی ادائیگی کے لئے مسجدوں میں نہ آئیں تو ہمیں یہ قطعی منظور نہیں. اگر شہر کی مساجد کے ذمہ داران کو حکومت کی عائد شدہ پابندیوں کا خوف ہے تو وہ مسجدوں کی ذمہ داریوں سے نجات حاصل کرتے ہوئے مصلیان کو مسجدوں کا نظام سونپ دیں. مذکورہ بالا جملے بزرگ و معمر عالم دین حضرت مولانا عبدالحمید ازہری نے نیاپورہ مدنی روڈ دفتر جمیعت علماء پر منعقدہ پر ہجوم میٹنگ میں کہتے ہوئے مزید کہا کہ ہماری غیرت ایمانی کا تقاضا ہے کہ ہم اپنی مسجدوں کو آباد رکھیں اور عید کی نماز بھی کھلے میدان یعنی عید گاہوں پر ادا کرنے کی کوشش کریں اس میٹنگ میں شہر کی تمام ہی ملی تنظمیوں, ائمہ مساجد و ذمہ داران کے علاوہ مختلف سیاسی جماعتوں کے نمائندہ افراد بڑی تعداد میں موجود تھے. مفتی محمد اسماعیل قاسمی نےاس میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں مسجدیں بند کرنے کا نہ تو فیصلہ کرنا ہے نہ ہی پولیس و کارپوریشن سے ٹکرانا ہے. ان کا جو کام ہے وہ کریں. ہمارا جو فریضہ ہے ہم اس کی ادائیگی کے لئے مسجدوں کے عقبی دروازوں کا استعمال کریں. انھوں نے شب برات کے موقع پر قبرستان آنے جانے اور نوافل کی ادائیگی کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ رمضان المبارک میں تراویح کے علاوہ عید کی نماز کے لئے بھی وہی حکمت اپنانا چاہئے. اس میٹنگ میں اشرف اکیڈمی کے اطہر حسین اشرفی نے ببانگ دہل کہا کہ اگر مسجدیں کھلی رکھنے پر ہمیں مقدموں کا سامنا ہوتا ہے تو ہم تیار ہیں. یہاں عبدالمالک بکرا نے مردانہ وار کہا کہ مسجدیں کسی بھی حال میں بند نہیں رکھی جائے گی نیز مساجد کے ذمہ داران کو پولیس محمکہ جو نوٹس تقسیم کررہا ہے اس کا جواب بھی نہیں دینا ہے. مذکورہ میٹنگ سے کئے گئے تمام اعلانات نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ مالیگاؤں ایک تحریکی شہر ہے. یہاں سے جو بھی تحریک سر اٹھاتی ہے وہ ہندوستان بھر میں پھیل کر ارباب حکومت اور قانون و عدلیہ کو لرزہ براندام کردیتی ہے.

جرم

ممبئی کا اقبال خان سات سال سے بیوی کے حصول کے لئے سرگرداں، سسرال والے ممبئی کانگریس کے شمیم انصاری کے ذریعہ پھنسانے کی دھمکی دے رہے ہیں

Published

on

shamim-iqbal

آج دنیا میں اس قدر کینہ بغض اور بے حیائی عام ہوگئی ہے کہ سانس لینا دشوار ہوگیا ہے. سرور کونین نبی آخرالزماں حضرت محمد مصطفی صلعم نے ہمیں 14 سو سال قبل حس دور جہالت سے آزادی دلائی تھی آج ہم واپس اس غلیظ زندگی کے پیچھے بھاگ رہے ہیں. زنا کو مشکل کرکے نکاح آسان بنایا گیا تھا , مگر قارئین اکرام آج ہم نے نکاح کو مشکل بنادیا ہے. جس کی وجہ سے زنا آسان ہوگیا ہے. آج امت مسلمہ میں اس قدر فتنے پیدا ہوگئے ہیں کہ کیا بتائے. ایسا ہی ایک واقعہ ممبئی کے آگری پاڑہ کا ہے. اقبال خان نامی ایک نوجوان نے اپنی روداد ممبئی پریس کو سنائی ہے. اپنی بیوی کے حصول کے لئے سات سال سے در در بھٹک رہا ہے. آگری پاڑہ کے ساکن اقبال نامی اس نوجوان کا معاشقہ پترا چال کی حنا تھا. 2013 میں اس جوڑے نے نکاح کرلیا. نکاح کے بعد اس نوجوان نے اپنی بیوی حنا کو اس کے میکے چھوڑ دیا. کیونکہ بقول اس نوجوان کے مجھے بھاگ کر شادی نہیں کرنا تھا. میں خوشی سے شادی کرنا چاہتا تھا. اس لئے اس نے اپنی بیوی کو کہا کہ وہ اپنی والدہ سے بات کرے اور اس کی والدہ کے راضی ہونے پر اچھے سے رشتے کریں گے . لیکن اس نوجوان کے مطابق حنا کی والدہ کو کچھ لوگوں نے بھڑکایا کہ وہ فلاں فلاں چیز کرتا ہے. اس کو لڑکی مت دو.

اب حنا کی والدہ اس نوجوان اقبال سے بدظن ہوگئی اور لڑکی دینے سے انکار کردیا. اس دوران اقبال نے بہت کوشش کی مگر سب رائیگاں گئی. اب لڑکی والوں نے آڑے ٹیڑھے غنڈہ عناصر کا سہارا لے کر اقبال کو ڈرانے دھمکانے کی کوشش کی. یہاں اقبال نے ان افراد کا نام لینے سے دامن بچایا ہے. اس کے بعد اس نوجوان کا کہنا ہے کہ ہم نے زیادہ ہاتھ پیر نہیں مارے. اس کے بعد پولس میں بھی لیٹر دیا گیا ڈرانے دھمکانے کے لئے. قاضی صاحب کا بھی لیٹر ڈالے کہ چھوڑ دے, خلع دے دے. یہاں تک کے پیسے کا بھی آفر دیا گیا. لیکن اس نوجوان نے تب بھی اپنی بیوی کو نہیں چھوڑا. اب ان لوگوں نے سیاسی افراد کا سہارا لیا ہے , اور اس سیاسی شخص جس کا نام شمیم انصاری ہے. جو ممبئی کانگریس سے منسلک ہے کی دھمکی دی جارہی ہے کہ اس کے ذریعہ پھنسا دے گے . اقبال خان کا ایک ہی مطالبہ ہے اسے اس کی بیوی لوٹا دی جائے. شادی کو سات سال کا عرصہ گزر گیا ہے . اب اقبال خان نے وکیل کی معرفت نوٹس بھی بھیجا ہے. اس کے باوجود وہ لوگ کوئی جواب نہیں دے رہے ہیں. مجھے میری بیوی لوٹا دو. اگر وہ میرے ساتھ نہیں رہنا چاہتی اور خلع چاہتی ہے تو میں اس کے ساتھ بات کرکے سارا معاملہ حل کردوں گا .

Continue Reading

سیاست

آگری پاڑہ میں اُردو بھون کی تعمیر کے منصوبہ پر اسٹینڈنگ چیئرمین یشونت جادھو کی ممبئی پریس سے خصوصی گفتگو

Published

on

yamini-yaswant-jadhav

ممبئی (وفا ناہید)
بائیکلہ کے رکن اسمبلی یامنی جادھو کی تجویز پر آگری پاڑہ میں اُردو بھون کی تعمیر کو منظوری مل گئی ہے. جس کے لئے بی ایم ای اسٹینڈنگ کمیٹی نےای وارڈ میں اُردو بھون کی تعمیر کے لئے ڈیڑھ کروڑ کا ٹوکن فنڈ منظور کیا ہے. یہ اُردو بھون آگری پاڑہ میں واقع ایم ٹی این ایل کے آفس کے قریب تعمیر کیا جائے گا. جس کی تعمیر کا کام آئندہ چھ ماہ میں کئے جانے کا امکان ظاہر کیا گیا ہے. اس ضمن میں نمائندے نے اسٹینڈنگ کمیٹی کے چیئرمین یشونت جادھو سے خصوصی گفتگو کی. یشونت جادھو نے ‘ممبئی پریس’ کو بتایا کہ جس طرح شیوشینا نے ‘ڈبے والا بھون ‘ , ‘وارکری بھون ‘ کی تعمیر کی اسی طرز مسلم سماج کے لئے اردو بھون کی تعمیر کی تجویز بائیکلہ کے رکن اسمبلی یامنی جادھو نے پیش کی.اس سلسلے میں ایک قرارداد میئر کشوری پیڈنیکر,اسٹینڈنگ چیئرمین اور ہاؤس لیڈر کو پیش کی گئی. جس کے لئے ڈیڑھ کروڑ فنڈ اسٹینڈنگ کمیٹی میں منظور کیا گیا. یہ پورا پروجیکٹ 6 سے 7 کروڑ کا ہے. ہوسکتا ہے کہ پورا منصوبہ مکمل ہونے کے بعد اس کی لاگت 10 کروڑ بھی آسکتی ہیں. اُردو بھون کی تعمیر کا پورا خرچ بی ایم سی برداشت کریں گی. موصوف نے مزید بتایا کہ اُردو بھون کی عمارت 4 اسٹوری بلڈنگ ہوگی. جس میں اُردو لائبریری, اسٹڈی سینٹر, کمیونٹی ہال, اُردو صحافیوں کے لئے کمرہ, کمپیوٹر فیسلیٹی وتھ ورک سیکشن ہونگے. علاوہ ازیں 7 سے 8 کلاس روم ہونگے جس میں آڈیو ویسول ٹرانسلیٹ ہوگا. مختلف کورس اور اسٹڈی سینٹر ہوگے. وومن انفارمیشن سینٹر اور اوکیشنل کورس سینٹر ہونگے. اس کے علاوہ مقابلہ جاتی امتحان جیسے یو پی ایس سی اور ایم پی ایس سی کی ٹریننگ دی جائے گی. پروجیکٹر وتھ اسکرین آڈیٹوریم ہال ہوگا , جس میں بیک وقت 200 افراد کے بیٹھنے کی سہولت ہوگی. اس کے علاوہ کچھ رومس دستیاب ہوگے , جو باہر سے آنے والے صحافی اور ادب نواز شخصیات کم چارجز پر حاصل کرسکتے ہیں. آرکیٹیک کی مدد سے بلڈنگ کی ڈیزائین کا کام شروع کردیا گیا ہے. اُردو بھون سے متعلق قانونی نقاط کے مکمل ہوتے ہی تعمیری کام کا آغاز کردیا جائے گا.

Continue Reading

جرم

دن میں جم ٹرینر اور رات میں ڈاکہ ، بھیونڈی میں چوری اور ڈکیتی کے معاملے میں 9 ملزمین کو گرفتار کرنے میں شانتی نگر پولیس کو ملی کامیابی

Published

on

bhiwandi-chori

بھیونڈی: (نامہ نگار )
بھیونڈی شہر میں دن میں جم ٹرینر اور رات کے اندھیرے میں ڈکیتی جیسے جرم کو انجام دینے والے 9 ملزمین کو گرفتار کرنے میں شانتی نگر پولیس کو کامیابی حاصل ہوئی ہے۔باالخصوص ان میں ایک نابالغ لڑکا اور ایک خاتون بھی شامل ہے۔ بھیونڈی شہر میں شانتی نگر پولیس اسٹیشن کی حدود میں گزشتہ 14 فروری کے روز ایک بسی چلانے والے کے دفتر میں گھس کر ملزمان نے دیسی کٹہ سے دھمکا کر شکایت کنندہ پر چاقو سے حملہ کرکے اسے زخمی کرکے اس کے پاس سے تین موبائل فون چوری کرنے کا معاملہ شانتی نگر پولیس اسٹیشن میں زبردستی چوری کا معاملہ درج کیا گیا تھا۔

اس ضمن میں ڈپٹی پولیس کمشنر یوگیش چوہان کی سربراہی میں ، اسسٹنٹ پولیس کمشنر پرشانت ڈھولے ، شانتی نگر پولیس اسٹیشن کے سینئر پولیس انسپکٹر شیتل راؤت ، کی رہنمائی میں اس معاملے کی تحقیقات میں پولیس انسپکٹر کرن کمار کاباڑی ، نتن پاٹل ، کرائم برانچ کی ٹیم کے اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر کسیلاس ٹوکلے ، پولیس سب انسپکٹر نیلیش جادھو ، رویندر پاٹل ، پولیس اسٹاف شیلکے ، چودھری ، اتھاپے ، ویتال ، کاکڑ ، وڈے ، موہیتے ​​، انگلے ، پاٹل پر مشتمل ٹیم نے ایک خفیہ ذرائع سے موصولہ اطلاع کی بنیاد پر ، تفتیش کرتے ہوئے مذکورہ چوری کے الزام میں 6 ملزمان کو حراست میں لے کر جب ان سے سختی سے پوچھ تاچھ کی گئی تو انہوں نے شانتی نگر پولیس اسٹیشن کی حدود میں دو اور نظامپورہ پولیس اسٹیشن کے تحت ایک اس طرح تین چوری کے معاملوں کا انکشاف ہوا ہے۔ خصوصی طور پر اس چوری کے معاملے میں تین ملزم ایسے ہیں جو دن میں جم میں بطور ٹرینر نوجوانوں کو فٹ رہنے کی تربیت دیتے ہیں اور رات کے وقت چوری کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔
اسی کے ساتھ پانچ دیگر چوری کی وارداتوں میں مزید تین افراد کو گرفتار کیا گیا جن میں ایک نابالغ اور ایک خاتون بھی شامل ہیں۔ اس طرح مجموعی طور پرشانتی نگر پولیس نے کل 9 ملزمان کو گرفتار کرنے میں کامیابی حاصل کرلی ہے۔ اور ان کے ذریعے سے جرم میں استعمال کیا گیا دیسی کٹہ ، چاقو ، 9 ہزار روپے قیمت کے دو موبائل فون ، دو ہزار روپے نقد اور اس جرم میں استعمال ہونے والی رکشہ سمیت 6 دیگر مختلف چوری کے معاملات بھی حل ہوگئے ہیں جس میں 1 لاکھ 20 ہزار روپے مالیت کے 6 تولہ سونے کے زیورات ، 95 ہزار روپے نقد ، 15 ہزار روپے کا موبائل اس طرح مجموعی طور پر 2 لاکھ 41 ہزار روپے کا مسروقہ مال ضبط کرنے کی کاروائی شا نتی نگر پولیس نے کی ہے۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com