Connect with us
Sunday,27-September-2020

(جنرل (عام

راہل کو وزیراعظم کا امیدواراتحادی ہی نہیں مانتے : مودی

Published

on

وزیراعظم نریندر مودی نے ہفتے کے روز کانگریس کے صدر راہل گاندھی پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اتحادکے رہنما ہی انھیں وزیراعظم کے عہدے کا امیدوار قبول نہیں کر رہے ہیں کیونکہ وہ سب کے سب وزیراعظم بننا چاہتے ہیں۔
مسٹر مودی نے اے آئی ڈی ایم کےاور بی جے پی کی مشترکہ انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ہفتے کے روز یہاں کہا،’کچھ روز قبل ڈی ایم کے کے صدر ایم کے اسٹالن نے ’نام دار‘ کو وزیراعظم کے عہدے کے امیداوارہونے کی تجویز رکھی لیکن کوئی اسے ماننے کو تیار نہیں ہوا۔ یہاں تک کہ ان کے’مہا ملاوٹی‘ دوست بھی اس پر رضامند نہیں ہوئے کیونکہ وہ سب وزیراعظم بننا چاہتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ کانگریس، ڈی ایم کے اور ان کے دیگر ’مہا ملاوٹی‘ دوست کبھی ملک کو ترقی نہیں دے سکتے۔ انہوں نے سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ جب باپ ملک کا وزیر خزانہ بنا تو بیٹے (کیرتی چدمبرم) نے ملک کو لوٹا‘۔ انہوں نے کہا،’جب وہ لوگ اقتدار میں تھے تو ہمیشہ لوٹنے میں مصروف تھے۔ اب تمام بدعنوان اکٹھا ہوکر مجھے ہرانے کی کوشش کر رہے ہیں‘۔
وزیراعظم نےدعویٰ کیا کہ کانگریس اور بے ایمانی سب سے اچھے دوست ہیں لیکن ٖغلطی سے پارٹی نے سچ بول دیا ہے۔ انہوں نے کہا،’اب وہ لوگ کہہ رہے ہیں کہ ’اب ہوگا نیائے‘ یعنی وہ اب یہ مان رہے ہیں کہ ابھی تک انہوں نے ’نیائے‘ نہیں کیا۔
انہوں نے مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ کمل ناتھ پر غریبوں کے پیسے انتخابی تشہیر پر خرچ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مدھیہ پردیش حکومت ان کے (کانگریس کے) لیے اے ٹی ایم مشین بن گئی ہے۔ انہوں نے کہا،’وہ لوگ غریبوں اور بچوں کے فلاح و بہبود پر خرچ ہونے والے پیسے کو انتخابی تشہیر میں خرچ کر رہے ہیں‘۔
انہوں نے کہا،’یہ ’تغلق روڈ اسکینڈل‘ کے نام سے مشہور ہوگیا ہے اور یہ تمام لوگ جانتے ہیں کہ نئی دہلی میں واقع تغلق روڈ پر کانگریس کا کون رہنما رہتا ہے‘۔

جرم

مالیگاؤں میں جواں سال لڑکی کی دردناک خودکشی سے سنسنی

Published

on

(خیال اثر)
مسجدوں میناروں کے شہر مالیگاؤں میں روز بروز خودکشی کے واقعات رونما ہورہے ہیں. معمولی گھریلو تنازعات , خانگی معاملات میں ناکامی اور مالی پریشانیاں بھی آئے دن کی خودکشی کا سبب بن رہی ہیں. ایسا ہی ایک دلدوز واقعہ آج بروز سنیچر تقریباً 12بجے مالدہ شیوار گٹ نمبر 178/1 مضافاتی علاقہ ہوٹل لبیک کے پچھے گھر والوں کی غیر موجودگی میں ایک 16سالہ لڑکی عائشہ شیخ محبوب نے پھانسی لگا کر خودکشی کرلی. بتایا جاتا ہے کہ گھر کے تمام افراد کام پر گئے ہوئے تھے اور لڑکی کی والدہ بازار گئی ہوئی تھی تبھی یہ واقعہ پیش آیا. سماجی کارکن شفیق انٹی کرپشن نے موقع واردات پر پہنچ کر نعش کو جنرل ہاسپٹل روانہ کرتے ہوئے قانونی نقاط کی تکمیل میں تعاون پیش کیا.
لڑکی کے قرب و جوار میں رہنے والوں کا کہنا ہے کہ لڑکی اور اس کے اہل خانہ کے حالات ٹھیک تھے. انھیں کوئی پریشانی کا سامنا نہیں تھا پھر بھی لڑکی نے یہ سنگین قدم کیوں اٹھایا محمکہ پولیس اس کی تفتیش میں مصروف ہے. شہر میں خودکشی کے بڑھتے واقعات شہری ذمہ داران سوچنے پر مجبور کررہے ہیں کہ آخر کیا وجہ ہے جو روز بروز خودکشی کے واقعات بڑھتے جارہے ہیں. اسی طرح شہر کے مخیر حضرات کو بھی چاہئے کہ وہ نہ صرف اپنے محلہ بلکہ خاص طور پر مضافاتی علاقوں میں رہنے والوں کی بھی مالی اعانت کا فریضہ انجام دیں. اگر غریب خاندانوان کو کسی قسم کی مالی پریشانیاں ہیں تو اس کا سدباب کریں تبھی ایسے دلدوز واقعات پر قدغن لگ سکتی ہے ورنہ آنے والے وقتوں میں مسجدوں میناروں کا یہ شہر خودکشی کی آمجگاہ بن جائے گا اور آئے دن کسی نا کسی محلے, گلیوں سے خودکشیوں کی خبریں منظر عام پر آتی رہیں گی-

Continue Reading

خصوصی

عازمین حج کے واپس کیے گئے 2100 کروڑ روپے، کورونا کی وجہ سے منسوخ کردیا گیا تھا سفر

Published

on

اس سال حج کی زیارت کورونا وائرس کی وجہ سے نہیں کی گئی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت نے 1 لاکھ 23 ہزار عازمین حج کو کٹوتی کیے بغیر 2100 کروڑ روپئے واپس کردیئے ہیں۔ رقم واپس کرنے میں ڈیجیٹل نظام بہت فائدہ مند رہا ہے۔ اب مرکزی حکومت 2021 حج یاترا کے لئے سعودی عرب کی حکومت کے رہنما خطوط کا منتظر ہے۔
ہفتہ کو، حج کمیٹی آف انڈیا کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کی زیر صدارت حج ہاؤس میں اجلاس ہوا۔ اس میں، عہدیداروں نے بتایا کہ 2100 کروڑ روپے 1 لاکھ 23 ہزار عازمین کو واپس کردیئے گئے ہیں جو کورونا وائرس کی وجہ سے حج نہیں کرسکے۔ مرکزی وزیر نے کہا، ‘مرکزی حکومت 2021 میں ہونے والے حج یاترا کی تیاری کر رہی ہے۔ ہم اکتوبر 20 نومبر سے حج 2021 کے لئے درخواست کا عمل شروع کریں گے۔ ہم سعودی عرب کی جانب سے حج 2021 کے حوالے سے جاری کردہ رہنما خطوط کا انتظار کر رہے ہیں۔
حج کمیٹی آف انڈیا کے سی ای او ایم اے خان نے بتایا، ‘ہفتہ کے روز حج پر ایک اجلاس ہوا۔ ہم ابھی سعودی عرب کے رہنما خطوط کا انتظار کر رہے ہیں۔ 19 اکتوبر کو، دہلی میں حج یاترا کے سلسلے میں ایک میٹنگ ہوگی۔

Continue Reading

(جنرل (عام

ایک دن میں 92 ہزار سے زیادہ افراد صحت یاب، فعال معاملوں میں کمی

Published

on

virus

ملک میں کورونا سے ٹھیک ہونے والوں کی تعداد انفیکشن کے نئے معاملوں سے زیادہ رہنے کا سلسلہ دوسرے دن بھی جاری رہا اور گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران جہاں انفیکشن کے 86 ہزار سے زیادہ کیس رپورٹ ہوئے، وہیں 92 ہزار سے زائد افراد نے اس وبا کو شکست دی، جس کے نتیجے میں فعال معاملوں میں ساڑھے چار ہزار سے زیادہ کی کمی واقع ہوئی۔
اتوار کے روز صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق، گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران 92043 مریض صحت یاب ہوئے ہیں، جس کے ساتھ ہی اب تک کورونا سے ٹھیک ہونے والے افراد کی تعداد 49،41،628 ہوگئی ہے۔ فعال معاملوں کی تعداد میں 4،567 کی کمی واقع ہوئی ہے کیونکہ صحت مند افراد کی تعداد انفیکشن کے نئے کیسوں سے زیادہ ہے اور اب یہ 9،56،402 رہ گئی ہے۔ ہفتے کے روز، 93،420 افراد انفیکشن سے ٹھیک ہوئے تھے، جس سے فعال معاملات 9،147 رہ گئے تھے۔
گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 88,600 نئے معاملے سامنے آنے سے متاثرہ افراد کی تعداد 59،92،533 تک پہنچ گئی۔ اسی مدت میں 1،124 مریضوں کی موت ہوگئی جس کی وجہ سے انفیکشن میں جان کی بازی ہارنے والوں کی تعداد بڑھ کر 94،503 ہوگئی۔ ملک میں فعال معاملے 15.96 فیصد اور اموات کی شرح 1.58 فیصد رہ گئی ہے، جبکہ ٹھیک ہونے والوں کی شرح 82.46 فیصد ہوگئی ہے۔
کورونا وبا سے سب سے زیادہ متاثر،مہاراشٹرا میں پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران فعال معاملے 3،655 کم ہو کر 2،69،535 رہ گئے، جبکہ 430 لوگوں کی موت ہونے سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 35،191 ہوگئی ہے۔ اس مدت کے دوران، 23،644 افراد انفیکشن سے ٹھیک ہوگئے، جس سے صحت مند افراد کی تعداد 10،16،450 ہوگئی۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com