Connect with us
Tuesday,15-June-2021

بین الاقوامی خبریں

شام:باغیوں کے حملہ میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 11 ہوگئی

Published

on

syria

شمالی شام کے شہرالیپو میں اتوار کو باغیوں کے مارٹر سے کئے گئے حملہ میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 11 ہو گئی۔
سیریا اسٹیٹ میڈیا کے مطابق اس سے پہلے حملے میں چھ افراد ہلاک ہو گئے تھے جن کی تعداد اب بڑھ کر 11 ہو گئی ہے. یہ واقعہ مغربی الیپو کے خالدیہ علاقے میں ہواتھا۔’الو طن ‘میڈیا کے حوالے سے مقامی پولیس کے مطابق الیپو صوبہ کے سكاری علاقے کے قریب ایک اور واقعہ میں دہشت گردوں کی طرف سے بچھائے گئے ایک بم کے پھٹنے سے ایک بچے کی موت ہو گئی اور دیگر دو افراد زخمی ہو گئے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ دسمبر 2017 میں حکومت نے الپپو میں کنٹرول حاصل کر لیا تھا لیکن باغی اب بھی مغربی دیہی علاقوں میں موجود ہیں جو لوگوں کی روزمرہ کی سرگرمیوں میں اکثر و بیشتر خلل ڈالنے کے لئے شہر میں مارٹر گولے داغتے ہیں۔

بین الاقوامی خبریں

سعودی عرب جانے والے مسافروں کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری

Published

on

saudi arab

سعودی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ملک میں پہنچنے والے مسافروں کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری کر دیا ہے۔

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی آف سول ایوی ایشن کی جانب سے تمام ایئر لائنز کیلیے گائیڈ لائن جاری کر دی، جس کے تحت سعودی عرب پہنچنے والے مسافروں کا ایپ پر رجسٹرڈ ہونا لازمی ہوگا۔

گاکا نے مراسلے میں کہا ہے کہ سعودی عرب آنے والے مسافر اپنے موبائل فونز میں توکلنا ایپ ڈاؤن لوڈ لازمی کریں، اور اگر مسافر ایپ سے متعلق آگاہ نہیں ہے، تو ایئر لائنز اس بات کو یقینی بنائیں کہ مسافروں توکلنا ایپلیکشن سے متعلق آگاہی ہو۔ سعودی سول ایشن کا کہنا ہے کہ مسافروں کے ایپ پر لازمی رجسٹریشن کا فیصلہ سعودی ایوی ایشن ایکٹ آرٹیکل 23 کے تحت کیا گیا ہے، توکلنا ایپ پر رجسٹرڈ نا ہونے والے مسافروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل گاکا کی جانب سے غیر ملکی مسافروں کے مملکت میں داخلے کیلیے آن لائن پورٹل پر ڈیٹا اندراج کرانا لازمی قرار دیا گیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گاکا کے مطابق مسافروں کو دوران بورڈنگ تفصیلات ایئرلائن کو لازمی فراہم کرنا ہوں گی۔ مسافروں کو موبائل فون پر رجسٹریشن کا میسج دکھانا ہوگا، رجسٹریشن نمبر کے ساتھ پرنٹ سرٹیفکیٹ بھی دکھانا ہوگا، جبکہ ویب سائٹ کے ذریعے پاسپورٹ نمبر سے رجسٹریشن کی تصدیق بھی کرنی ہوگی۔

خیال رہے کہ 16 جون سے نئے قوانین پر عمل درآمد لازمی قرار دی گئی ہے۔

Continue Reading

بین الاقوامی خبریں

نیٹو کا افغانستان میں فوجی مشن ختم کرنے کا اعلان

Published

on

nato

افغانستان میں تقریباً دو دہائیوں سے موجود نیٹو افواج نے افغانستان میں اپنا فوجی پروگرام باقاعدہ ختم کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق نیٹو ہیڈ کوارٹرز برسلز میں ’ڈور اسٹیپ اسٹیٹمنٹ‘ میں افغانستان سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں نیٹو سیکریٹری جنرل یین سٹولٹن برگ نے کہا کہ ہم افغانستان میں اپنا فوجی مشن ختم کر رہے ہیں، لیکن ہم افغان عوام اور افغان سیکیورٹی فورسز کی مدد جاری رکھیں گے، یہ ہم وہاں علیحدہ سے اپنی سویلین موجودگی کے ذریعے کریں گے۔

نیٹو سیکریٹری جنرل نے مزید کہا کہ ہم افغان فورسز کی حمایت، مشورہ اور ان کی مالی مدد جاری رکھیں گے جس کی فراہمی کا وعدہ تمام اتحادیوں نے کر رکھا ہے، اس کے ساتھ ہی ہم اس بات پر بھی غور کر رہے ہیں، کہ کس طرح افغان فوج کو بیرون ملک تربیت فراہم کی جائے؟۔ یین سٹولٹن برگ نے بتایا کہ نیٹو کابل ائیر پورٹ سمیت اہم انفراسٹرکچر کو فعال رکھنے کے لیے کام کر رہے ہیں، اس حوالے سے نیٹو امریکہ، ترکی اور دوسروں کے ساتھ بات چیت کر رہا ہے، کیوں کہ یہ انٹرنیشنل کمیونٹی کی سفارتی موجودگی اور بین الاقوامی امداد پہنچانے کے لیے ضروری ہے۔

اس موقع پر نیٹو سیکریٹری جنرل نے باور کروایا کہ ہم افغانستان میں گذشتہ بیس سال سے ہیں لیکن ہم وہاں مستقل رہنے کے لیے نہیں آئے تھے۔

اس سے قبل ترکی نے افغانستان میں استحکام لانے کے لیے امریکہ کو مدد کی پیش کش کی تھی، ترک صدر رجب طیب اردوان کا کہنا تھا کہ افغانستان سے امریکی اور اتحادی افواج کے انخلاء کے بعد ترکی وہ واحد قابلِ بھروسہ نیٹو رکن ملک ہے جو وہاں موجود رہے گا، اس معاہدے پر آج نیٹو کانفرنس کی سائیڈ لائن پر صدر بائیڈن سے تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ نیٹو نے رواں سال اپریل میں امریکی صدر جو بائیڈن کے امریکی فوج کو وطن واپس بلانے کے فیصلے کے بعد افغانستان سے اپنے مشن سے دستبرداری کا آغاز کیا تھا۔

Continue Reading

بین الاقوامی خبریں

افغانستان میں امن واستحکام لانے کیلئے ترکی کی امریکہ کو مدد کی پیشکش

Published

on

Turkey-&-United-States

ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے امریکی صدر جو بائیڈن سے پہلی مرتبہ بالمشافہ ملاقات سے ایک روز قبل کہا ہے کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کے بعد ترکی ‘واحد قابل اعتماد’ ملک ہے جو افغانستان میں استحکام لا سکتا ہے۔

مسٹر اردوان نے یہ بھی کہا کہ وہ پیر کے روز برسلز میں نیٹو کے سربراہی اجلاس کے موقع پر جو بائیڈن کے ساتھ اپنی ملاقات میں اس معاملے پر بات کریں گے۔ برسلز روانگی سے قبل استنبول ہوائی اڈے پر انہوں نے صحافیوں کو بتایا کہ امریکہ، افغانستان چھوڑنے کی تیاری کر رہا ہے، اور جب وہ کابل کو خیر باد کہہ دیں گے، تو وہاں پر استحکام کو برقرار رکھنے کا واحد قابل اعتماد ملک ترکی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ترک عہدیداروں نے اپنے امریکی ہم منصبوں کو فوجیوں کے انخلا کے بعد افغانستان میں انقرہ کے منصوبوں کے بارے میں آگاہ کیا تھا۔ تاہم انہوں نے منصوبوں سے متعلق تفصیلات فراہم نہیں کیں۔

ڈان میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق ترک صدر نے امریکہ کو اشارہ دیا ہے کہ وہ اپنے نیٹو اتحادی پر انحصار کر سکتا ہے۔ انہوں نے ‘امریکہ خوش ہے اور اب ہم ان کے ساتھ افغانستان کے عمل پر تبادلہ خیال کریں گے۔‘

ایک ترک عہدیدار نے تصدیق کی کہ مغربی طاقتیں کابل ایئرپورٹ کی حفاطت کے لیے ترکی کے وہاں رہنے پر راضی ہیں۔ تاہم عہدیدار نے مزید کہا کہ ’اگر کوئی مدد نہیں دیتا تو ترکی کیوں کوشش کرے گا، اس لیے ان امور کو واضح کرنے کی ضرورت ہے۔’

دوسری جانب ہفتے کے روز طالبان نے کہا کہ افغانستان سے امریکی اور نیٹو فورسز کے انخلا کے بعد کسی بھی دوسرے ملک کو اپنی فوجی یہاں تعینات کرنے کی امید نہیں کرنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سفارت خانوں اور ہوائی اڈوں کی حفاظت افغانوں کی ذمہ داری ہوگی۔

علاوہ ازیں امریکہ سے کشیدہ تعلقات کو بہتر بنانے کے حوالے سے ترک صدر نے واضح کیا کہ ہمیں اختلاف کو پیچھے چھوڑ کر آگے کے امور پر تبادلہ خیال کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ہم توقع کرتے ہیں کہ امریکہ بھی اگر مگر کے بغیر بات چیت کرے گا۔ جو بائیڈن کی جانب سے نسل کشی کی اصطلاح کا حوالہ دیتے ہوئے صدر رجب طیب اردوان نے کہا کہ اس سے ہمیں شدید رنج ہے، کیونکہ ترکی کوئی عام ملک نہیں ہے، یہ امریکہ کا اتحادی ہے۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com