Connect with us
Saturday,12-June-2021

قومی خبریں

شوپیاں کے ترکہ وانگام گاؤں میں دوسرے روز بھی فوجی آپریشن جاری

Published

on

جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں کے ترکہ وانگام گاؤں میں جمعرات کو مسلسل دوسرے روز بھی سیکورٹی فورسز کا کارڈن اینڈ سرچ آپریشن جاری رہا سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جنگجوؤں کے چھپنے کی اطلاع موصول ہونے پر فوج، سی آر پی ایف اور پولیس کی ایک مشترکہ ٹیم نے بدھ کی صبح مین ٹاؤن شوپیاں سے قریب دس کلو میٹر دوری پر واقع ترکہ وانگام گاؤں کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا تھا۔
انہوں نے بتایا کہ بدھ کی شام کو تاریکی کے پیش نظر آپریشن معطل کیا گیا تھا تاہم جمعرات کی صبح اس کو دوبارہ شروع کیا گیا۔
مقامی لوگوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے گاؤں کی طرف آنے والے تمام چھوٹے بڑے راستوں کو بند کر دیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ گاؤں میں سیکورٹی اہلکاروں اور ان کی گاڑیوں کی نقل وحمل کے بجز باقی معمولات ٹھپ ہیں اور لوگ گھروں میں ہی بیٹھے ہوئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ سیکورٹی اہلکار گھر گھر تلاشی کر رہے ہیں جس کے باعث گاؤں میں ہر سو سناٹا چھایا ہوا ہے۔

سیاست

کانگریس نے کورونا ہلاکتوں کے اعداد و شمار چھپانے کی عدالتی تفتیش کا مطالبہ کیا

Published

on

Pawan Khera

کانگریس نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حکومت پر کورونا ہلاکتوں کے اعداد و شمار چھپانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں جن ریاستوں میں اس (بی جے پی) کی حکومتیں ہیں، وہاں اعداد و شمار میں ہیرا پھیری ہوئی ہے، لہٰذا وزیر اعظم اس کی عدالتی تفتیش کروانا چاہیے، اور وہاں کے وزرائے اعلیٰ کو اخلاقی بنیاد پر استعفیٰ دینا چاہیے۔

کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے ہفتے کے روز یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ اعداد و شمار چھپانے میں بی جے پی حکومت کا سانپ اور نیولا جیسا رشتہ ہے۔ بی جے پی حکومت نے صرف کووڈ سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد ہی نہیں چھپائی ہے بلکہ بے روزگاری، گھریلو مجموعی پیداوار (جی ڈی پی) میں کمی ہونے سمیت تمام طرح کے اعداد و شمار چھپائے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گجرات میں بی جے پی حکومت نے کورونا ہلاکتوں کے اعداد و شمار چھپائے۔ اسی طرح سے مدھیہ پردیش کے بھوپال، اندور وغیرہ شہروں میں اعداد و شمار چھپائے گئے۔ حالات دیکھ کر محسوس کرتا ہے کہ گجرات، مدھیہ پردیش، اترپردیش، کرناٹک جیسے بی جے پی کے زیر اقتدار ریاستوں میں کورونا کے اعداد و شمار چھپانے کا مقابلہ ہو رہا ہے۔ لاکھوں ایسے ہلاک ہونے والے ہیں، جن کے بارے میں یہ معلوم ہی نہیں کہ ان کی موت کورونا سے ہوئی ہے یا کسی دوسری بیماری سے ہوئی ہے۔

ترجمان نے کہا ہے کہ اترپردیش میں کورونا ہلاکتوں کی تعداد چھپانے کے لیے شمشان گھاٹ پر ایک طرح سے پردے لگائے گئے تھے تاکہ کوئی باہر سے تصیور کشی نہ کر سکے۔ ریاست کے ضلع وارانسی میں اعداد و شمار چھپانے کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اپریل میں وہاں 127 اموات دکھائی گئی ہیں، جبکہ تنہا منی کرنیکا گھاٹ پر ہی رواں ماہ کے ایک ہفتے میں 1500 آخری رسومات ادا کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے زیر اقتدار ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کو اخلاقی ذمہ داری قرار دیتے ہوئے فوراً استعفیٰ دینا چاہیے، اور مسٹر مودی کو پورے ملک میں عدالتی تفتیش کروانے کا حکم دینا چاہیے، جس سے یہ پتہ چل سکے کہ ملک کی مختلف ریاستوں میں کورونا کے علاج میں تاخیر اور اعداد و شمار چھپانے کے لیے کون ذمہ دار ہے۔

Continue Reading

سیاست

کانگریس پارٹی ملک کے غداروں کا ’کلب‘ہے : بی جے پی

Published

on

bjp

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے الزام عائد کیا ہے کہ کانگریس پارٹی ملک کے غداروں کا ’کلب‘ ہے جو ایک طویل عرصے سے اسے ’ٹول کٹ’ کے ذریعہ ملک کو کھوکھلا کرنے کا کام کر رہی ہے۔

ہفتے کے روز یہاں پریس کانفرنس میں بی جے پی کے ترجمان سمبت پاترا نے کانگریس کے رہنما اور مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلی دگ وجے سنگھ کو آرٹیکل 370 پر مبینہ ریمارکس پر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ’’مسٹر سنگھ وہی شخص ہیں جنھوں نے پلوامہ حملے کو ایک حادثہ قرار دیا تھا، اور اسے دہشت گردانہ حملہ ماننے سے انکار کر دیا تھا۔ مسٹر سنگھ وہ ہیں جنہوں نے ممبئی دہشت گردانہ حملے کو راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کی سازش قرار دیا، اور اس وقت پاکستان کا ساتھ دیا۔ کشمیر جیسے سنگین معاملے پر کانگریس کے قائد کا یہ بیان کانگریس کی ذہنیت کو ظاہر کرتا ہے۔‘‘

انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے خلاف کس طرح بولنا ہے، وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف کس طرح زہر اگلنا ہے، ان تمام سازشوں کو ٹول کٹ کے ذریعہ سر انجام دیا جا رہا ہے۔

Continue Reading

جرم

لتیہار : پولیس جھڑپ میں ایک نکسلی ہلاک، اسلحہ برآمد

Published

on

DIG-Rajkumar

جھارکھنڈ کے ضلع لتیہار کے گارؤ پولیس تھانہ علاقے میں ہفتے کے روز پولیس اور کالعدم ماؤنواز تنظیم کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (ماؤ نواز) کے نکسلیوں کے مابین ایک جھڑپ میں ایک نکسلی مارا گیا۔

پلامو ریجن کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) راجکمار لکڑا نے یہاں بتایا کہ اس جھڑپ میں ایک نکسل کے ہلاک ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ جائے وقوعہ کے لئے ہیڈ کوارٹر سے اضافی نفری روانہ کر دی گئی ہے۔

اس دوران پولیس ذرائع نے یہاں بتایا کہ نکسلیوں کے خلاف علاقے میں چھاپے مارنے کے لئے 203 کو برا بٹالین، 214 بٹالین سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) اور جھارکھنڈ جیگوار کی جانب سے مہم چلائی جا رہی ہے۔

دریں اثنا کوکو پیری جنگل میں سیکیورٹی فورسز کے جوان آگے بڑھ رہے تھے، تبھی چھوٹو کھروار کے دستہ کے ارکان نے فائرنگ شروع کر دی۔ جوابی کارروائی میں سیکیورٹی فورس کے اہلکاروں نے فائرنگ شروع کر دی۔ تقریباََ ایک گھنٹے تک وقفے وقفے سے جاری فائرنگ کے بعد ایک نکسلی مارا گیا، جبکہ دیگر جنگلات کا فائدہ اٹھا کر فرار ہوگئے ۔موقع سے سکیورٹی فورسز کے جوانوں نے چار ہتھیار سمیت متعدد سامان برآمد کیا۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com