Connect with us
Tuesday,19-January-2021

جرم

ویڈو دیکھیں:ہیرا گروپ متاثرین ایسوسیشن کے صدر کو ملی پاکستان سے موت کی دھمکی

Published

on

ہیرا گروپ آف متاثرین ایسوسیشن کے صدر شہباز احمد خان کو پاکستانی مولانا توصیفرحمان نے دھمکی دی ہے اور انھیں نوہیرا شیخ اور ہیرا گروپ کے معاملے سے دور رہنے کو کہا ہے۔

یہ کوئی نئی بات نہیں ہے کی شہباز احمد خان کے ساتھ پہلی بار اس طرح کا برتاو کیا جا رہا ہے۔خبروں کے مطابق نوہیرا شیخ کے ایسے کئی کار کرتا ہیں جو ان کے خلاف ہیں۔کیونکی وہ پچھلے ۶ مہینوں سے ہیرا گولڈ پونجی اسکیم دھوکا دہی کا خلاسہ کر رہے ہیں۔

شہباز احمد نے پاکستانی مولانا سے خترے کے بارے میں بات کرتے ہوے کہا کی اصل میں
مولانا توصیفررحمان گلف اور مڈل ایسٹ کنٹریوں کے پروموٹرمیں سے ایک ہیں۔ انھوں نے ہی پاکستان اور بنگلہ دیش میں رہنے والوں کو ہیرا گولڈ میں انویسٹ کرنے کو کہا۔

مسٹر خان نے یہ بھی بتایا کی سعودی عرب جنوری۲۰۱۷میں مولانا توصیفررحمان کو آئی ۔ ایس۔آئی کے ساتھ میل ملاپ میں گرفتار بھی کیا تھا۔ خان نے یہ بھی اطلاع دی کی مولانا نے نوہیرا شیخ اور اس کے بزنیس کو سیدھا بڑھاوا دیا ہے۔

اسی دوران ہزاروں لوگوں نے نوہیرا شیخ اور اس کی پونجی اسکیم کے خلاف شکایت درج کی ہے۔ مسٹر خان نے کہاکی یہ ایک بین الاقوامی سطح کی دھوکا دہی کا معاملہ ہے اور سی بی آئی کو اس کیس کو حل کرنے کا فریضہ اٹھانا چاہے۔

زیادہ جانکاری کے لئے ویڈیو دیکھیں

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

جرم

ہیرا گولڈ سپریمو نوہیرا شیخ 6 ہفتوں کے لئے ضمانت پر رہا

Published

on

nora-shaikh

مالیگاؤں (خیال اثر)
ہیرا گولڈ کی منافع بخش اسکیموں کے تار حیدر آباد تلنگانہ سے ہوتے ہوئے ہندوستان کی دیگر ریاستوں کے علاوہ خلیجی ممالک میں بھی پھیلے ہوئے ہیں. ہیرا گولڈ کی آفسوں میں ملک و بیروں ممالک کے منظور شدہ سرٹفکیٹ بھی دیواروں پر آویزاں رہتے ہیں.سونے ,چاندی, ہیروں کی تجارت سمیت دیگر کاروبار میں روپیہ لگا کر بھاری منافع حاصل کرنے کا لالچ دیتے ہوئے بے شمار افراد کو اپنی جانب راغب کرکے گھر بیٹھے منافع حاصل کرنے کا خواب دیکھنے والے افراد نے اپنی جمع شدہ پونجی ہیرا گولڈ کے حوالے کردی تھی.

ہیرا گولڈ کی سپریمو نے اعلان کیا تھا کہ حاصل شدہ منافع میں سے کچھ فیصد وہ فلاح عامہ پر خرچ کرنے کے بعد دیگر افراد کو ان کی رقومات کی مناسبت سے بطور منافع تقسیم کی جائے گی لیکن کچھ عرصہ منافع دینے کے بعد ہیرا گولڈ نامی یہ کمپنی متزلزل ہو گئی اور جب لوگوں کو ماہانہ منافع کی رقم ملنا بند ہوئی تو شہروں شہروں ہیرا گولڈ کے خلاف پولیس میں شکایت درج ہونے لگی. اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ تقریباً ہزار کروڑ سے زائد کا سرمایہ اس کمپنی میں لگایا گیا ہے جو آج واپسی سے محروم ہے اسی الزام کے تحت ہیرا گولڈ سپریمو نوہیرا شیخ نامی مسلم خاتون گرفتار ہونے کے بعد جیل تک جا پہنچی. معاملہ سپریم کورٹ جیسی اعلی عدالت میں مسلسل جاری رہا.

نوہیرا شیخ نے بارہا تمام رقومات کی واپسی کا عندیہ دیتے ہوئے ضمانت کی درخواست کی لیکن ہر بار انھیں ناکامی ہی ہاتھ آئی مگر سپریم کورٹ نے آج سخت شرائط کے ہمراہ6 ہفتوں کے لئے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم جاری کیا گیا ہے حالانکہ شرائط کا علم نہیں ہوا ہے لیکن 6 ہفتوں کی قلیل مدت میں ہزار کروڑ سے زائد روپیے واپس لوٹانا انتہائی دشوار گزار عمل ہے اگر نوہیرا شیخ ہیرا گولڈ کی تمام املاک فروخت کرنا بھی چاہیں تو انھیں طویل وقت درکار ہوگا جو 6ہفتوں میں ناممکن بتایا جاتا ہے. مقدمہ کی سماعت کے دوران نوہیرا شیخ نے حیدرآباد کے لیڈران کے خلاف الزامات عائد کرتے ہوئے کہا کہ حیدرآباد کے یہ لیڈران ان کی املاک اور زمینوں پر غاصبانہ قبضہ کرنا چاہتے تھے نیز انھوں نے جب ان کے خلاف اپنی ایک سیاسی پارٹی کی بنیاد رکھی تو انھوں نے انتقامی غرض سے جھوٹے مقدمات میں انھیں پھنسایا ہے حالانکہ نوہیرا شیخ نے کھل کر کسی حیدر آبادی لیڈر کا نام عیاں نہیں کیا ہے لیکن عام افراد کا کہنا ہے کہ نوہیرا شیخ کا شارہ اویسی برادران کی جانب ہے. نوہیرا شیخ کو 6ہفتوں کی ضمانت حاصل ہونے پر دیگر شہروں کے علاوہ مالیگاؤں, دھولیہ اور قرب و جوار کے شہری افراد کے دلوں میں امیدیں جاگ گئیں ہیں کہ انھیں منافع نہ سہی لیکن ان کی اصل رقومات کی واپسی جلد از جلد ہو جائے گی.

Continue Reading

جرم

مالیگاؤں سے قریب ونی نامی گاؤں سے دیڑھ کروڑ سے زائد مالیت کے گٹکے دو کنٹینر سمیت ضبط, چار گرفتار

Published

on

zabapt

مالیگاؤں (خیال اثر)
ایک طویل عرصہ سے منموعہ گٹکوں کی تجارت اپنی پوری توانائی کے ساتھ جاری ہے. ماضی میں شہر کے سابق ڈی وائے ایس پی گجانن راج مانے نے گٹکا مافیاؤں پر اس بری طرح سے گھیرا تنگ کیا تھا کہ بڑے بڑے گودام اور گٹکوں کی تجارت میں ملوث افراد روپوشی اختیار کرتے ہوئے دیگر کاروبار کی جانب راغب ہو گئے تھے. شہر سے جوں ہی ان کا تبادلہ ہوا اس غیر قانونی تجارت میں ملوث افراد دوبارہ اپنے اس غیر قانونی اقدام میں پوری تندہی سے واپس لوٹ آئے. یہ منموعہ گٹکے ریاست گجرات سے پھیلتے ہوئے دیگر شہروں اور ریاستوں میں ہر عمر کے افراد کو اپنا عادی بناتی جارہے ہیں. ان گٹکا مافیاؤں کے بڑے بڑے گودام شہر کے مغربی حصہ سوئے گاؤں میں موجود ہیں یہ علاقہ چونکہ گجرات کی سرحدوں سے قریب تر ہے شاید اسی لئے قانون و عدلیہ کی آنکھوں سے بچتے ہوئے گٹکوں کے بڑے بڑے تاجر سواریوں کے ذریعے اس غیر قانونی تجارت کو فروغ دے رہے ہیں. موصولہ تازہ اطلاعات کے مطابق ناسک دیہی حلقہ کے ضلع ایس پی سچن پاٹل کو خفیہ معلومات دستیاب ہوئی کہ بھاری مقدار میں گٹکوں کی ایک بڑی کھیپ کنٹینر کے ذریعے ناسک ساپو تارا روڈ سے گزرنے والی ہے تب ضلع ایس پی کی رہنمائی میں ساپو تارا سے قریب ونی نامی پولیس اسٹیشن کی حدود میں تعینات اسسٹنٹ پولیس آفیسر سوپنیل راجپوت کی قیادت میں ناکہ بندی کرتے ہوئے گاڑیوں کی چیکنگ شروع کی گئی اس دوران راجستھان سے آرہے دو کنٹینروں کو روکتے ہوئے جب ان کی تلاشی لی گئی تو دونوں میں گٹکا اور تمباکو کے بکس نظر آئے. ونی پولیس عملہ نے تمام بکس اور کنٹینر کو اپنے قبضہ میں لیتے ہوئے مقدمہ درج کیا ہے. اس کاروائی میں چار افراد سمیت دو کنٹینر ضبط کرتے ہوئے تفتیش شروع کردی گئی ہے. بتایا جاتا ہے کہ گرفتار شدگان میں دو افراد کا تعلق راجستھان سے ہے جبکہ ڈرائیور بھی راجستھانی بتایا جارہا ہے. ماضی میں ضبط کئے گئے گٹکوں کی مالیت لاکھوں میں ہوا کرتی تھی لیکن حالیہ ضبطی کاروائی میں ایک کروڑ 64 لاکھ 37 ہزار روپیے کے گٹکوں کی ضبطی اب تک کی سب سے بڑی کاروائی میں شمار کی جارہی ہے جس سے گٹکا مافیاؤں کے حوصلے پست ہو سکتے ہیں. پولیس کی اطلاع کے مطابق آر جے 30جی اے 3914,آر جے 30جی اے 3824 کنٹینروں کے نمبر بتائے گئے ہیں جو کہ ونی پولیس عملہ نے کرنج کھیڑ نامی قصبہ سے منموعہ گٹکوں کی نقل و حمل کرتے ہوئے ضبط کئے ہیں.

Continue Reading

جرم

دنیا میں کورونا متاثرین سے 20.39 لاکھ سے زیادہ افراد کی موت

Published

on

corona-virus

دنیا میں مہلک کورونا وائرس (کووڈ-19) کی وبا کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور ابھی تک اس وائرس سے 20 لاکھ 39 ہزارسے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ ساڑھے نو کروڑ سے زیادہ افراد اس سے متاثر ہوئے ہیں۔
امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر فار سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق دنیا کے 191 ممالک میں ابھی تک 20 لاکھ 39 ہزار 239 افراد کی موت ہو چکی ہے اور نو کروڑ 55 لاکھ 30 ہزار 563 افراد متاثر ہوئے ہیں اور پانچ کروڑ 25 لاکھ 97 ہزار 341 اس وبا سے نجات پا چکے ہیں۔
کورونا وائرس سے دنیا میں سب سے زیادہ متاثر امریکہ میں متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 2.40 کروڑ ہوگئی ہے جبکہ 3.98 لاکھ سے زیادہ مریضوں کی موت ہوچکی ہے۔ ہندوستان میں متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ پانچ لاکھ 81 ہزار 837 ہوگئی ہے۔ صحتیاب ہونے والے افراد کی تعداد ایک کروڑ دو لاکھ 28 ہزار 753 ہوگئی ہے جبکہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد 1,52,556 ہوگئی ہے۔
برازیل میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 85.11 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اس وبا کی وجہ سے 2.10 لاکھ سے زیادہ مریض فوت ہوچکے ہیں۔ روس میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 35.52 لاکھ ہوگئی ہے جبکہ 65,059 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ برطانیہ میں 34.43 لاکھ سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں اور 90,031 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ فرانس میں تقریباً 29.72 لاکھ افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور 70,826 مریض فوت ہوچکے ہیں۔

Continue Reading
Advertisement

رجحان

WP2Social Auto Publish Powered By : XYZScripts.com